بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / بھٹکل میں کل سے شروع ہوگا کورونا ویکسی نیشن کا عمل: پہلے مرحلے میں ہیلتھ ورکرس کو لگائے جائیں گے ٹیکے

بھٹکل میں کل سے شروع ہوگا کورونا ویکسی نیشن کا عمل: پہلے مرحلے میں ہیلتھ ورکرس کو لگائے جائیں گے ٹیکے

Print Friendly, PDF & Email

بھٹکل: 15 جنوری، 2021 (بھٹکلیس نیوز بیورو) ملک بھر میں کل یعنی 16 جنوری سنیچر کے روز سے کورونا وائرس کے ٹیکےلگانے کی مہم شروع ہورہی ہے۔  جس کے لیے کل وزیر اعظم نریندر ملک گیر سطح پر کووڈ۔19 ٹیکہ کاری مہم کا آغاز کریں گے۔ سبھی ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطوں میں ٹیکوں کی ڈوز بھیج دی گئی ہیں۔ ڈرگ کنٹرولر جنرل آف انڈیا (DCGI) نے سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا کی کووی شیلڈ (Covishield) ویکسین اور بھارت بائیوٹیک کی کو ویکسین (Covaxin) کو ہندستان میں ہنگامی استعمال کی منظوری دے دی ہے۔

اسی طرز پر کل بھٹکل میں بھی پہلے مرحلے میں ہیلتھ ورکروں کو کورونا وائرس کے ٹیکے لگائے جانے والے ہیں جسکے لیے تمام تر تیاریاں مکمل ہونے کی جانکار ی تعلقہ ہیلتھ افسر ڈاکٹر مورتی راج بھٹ نے اخباری نمائندوں کو دی ہے۔انہوں نے بتایا کہ آج جمعہ کو اسٹاف کو  ویکسی نیشن کے تعلق سے ضروری تربیت اور جانکاری فراہم  کی گئی ہے اور انہیں ٹیکہ لگانے اور اس کے بعد کے عمل کے بارے میں بھی بتایا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اس کام کے لیے پانچ لوگوں پر مشتمل ایک ٹیم بنائی گئی ہے جس میں ایک ویکسی نیشن افسر اور ڈاکٹر و نرسیں بھی شامل ہیں ۔ یہ ٹیم کل پہلے دن  ہیلتھ ورکرس میں سے سو لوگوں کی ٹیکہ کاری کرے گی۔ڈاکٹر مورتی کے مطابق  جن لوگوں نے اپنا نام لکھوایا ہوگا اُسی فہرست کے مطابق  نمبروار انجکشن لگوائے جائیں گے۔

ہیلتھ افسر نے بتایا کہ اگر چہ اس ٹیکے کا الٹا اثر ہونے کے امکانات  بہت کم ہیں لیکن ٹیکہ لگانے کے بعد آدھا گھنٹہ مشاہدے کے لیے رکھا جائے گا۔ انہوں نے دوا کے ری ایکشن کی صورت میں اس کے ازالہ کے لیے بھی انتظامات کیے جانے کی جانکاری دی۔

اس تعلق سے مزید جانکاری دیتے ہوے اسسٹنٹ کمشنر مسٹر بھرت نے بتایا  ملک میں شروع ہونے والی کورونا ٹیکہ کاری کی یہ مہم تین مرحلوں میں چلے گی جس میں پہلے مرحلے میں  ہیلتھ ورکرس یعنی ڈاکٹرس، نرس، ایمبولنس ڈرائیورس، کلینک ورکرس، انگن واڑی کارکنان، آشا ورکرس وغیرہ کو ٹیکہ لگایا جائے گا۔ اسی طرح  دوسرے مرحلے میں  کورونا وارئیرس یعنی  پولس، تحصیل آفسران، میونسپل آفسران اور دیگر سرکاری ورکرس کا ویکسی نیشن ہوگا جبکہ  تیسرے مرحلے میں عام لوگوں میں پچاس سے زائد عمر کے لوگوں کو پہلےٹیکہ لگایا جائے گا  لیکن یہ کب ہوگا ابھی کہنا ممکن نہیں ہے۔

واضح رہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی 16 جنوری کو صبح 10.30 بجے ویڈیو کانفرنس کے توسط سے ملک گیر سطح پر کووڈ۔19 ٹیکہ کاری مہم کا آغاز کریں گے۔ یہ دنیا کی سب سے بڑی ٹیکہ کاری مہم ہو گی۔ اس پروگرام سے سبھی ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطوں کے 3006 مقامات ڈیجیٹل کے ذریعہ جڑیں گے اور ہر مرکز پر 100 لوگوں کو ٹیکہ لگایا جائے گا۔ ویکسین کو لے کر حکومت نے رہنما خطوط جاری کئے ہیں۔

کووی شیلڈ ویکسین اور کو ویکسین کی قیمت ہندستان میں 200-295 روپئے ہو گی۔ حکومت نے ابھی تک 1.65 کروڑ روپئے کی ویکسین سبھی ریاستوں کو بھیج دی ہے۔ پہلے مرحلے میں صحت کارکنان کو ویکسین کی ڈوز دی جائے گی۔

صحت وزارت نے ریاستوں کو مکتوب لکھ کر کہا ہے کہ ویکسین کی ڈوز صرف 18 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کو لگے گی۔ اس کے علاوہ یہ بھی کہا گیا ہے کہ ویکسین کو بدلا نہیں جائے گا۔ یعنی دونوں ڈوز ایک ہی کمپنی کی ہو گی۔

مرکزی وزارت صحت نے دونوں ٹیکوں کی ٹیکہ کاری کے بعد ہلکے سائڈ ایفیکٹس کے بارے میں بھی بتایا ہے۔ کووی شیلڈ کے ڈوز کے انجیکشن لگنے کی جگہ پر تھوڑا درد ہو سکتا ہے۔ سر درد اور تھکان بھی ہو سکتی ہے۔

x

Check Also

مدینہ ویلفئیر سوسائٹی کے زیر اہتمام دس اووروں کا تعلقہ لیول کرکٹ ٹورنامنٹ ہوا شروع

بھٹکل: 21 فروری،2021  (بھٹکلیس نیوز بیورو) مدینہ  ویلفیر سوسائٹی کے زیراہتمام دس ...