بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / بھٹکل لیبر محکمہ میں بدعنوانیوں کا الزام؛ ڈی سی کو پیش کی گئی یاد داشت

بھٹکل لیبر محکمہ میں بدعنوانیوں کا الزام؛ ڈی سی کو پیش کی گئی یاد داشت

Print Friendly, PDF & Email

بھٹکل: 17 جون، 19 (بھٹکلیس نیوز بیورو) بھٹکل لیبر محکمہ میں مختلف قسم کی بدعنوانیوں کا الزام لگاتے ہوئے کرناٹکا سوابھیمانی کرانتی سنگھا نے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کے ذریعہ ڈپٹی کمشنر کو ایک یاد داشت سونپی ہے جس میں ان چیزوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی مانگ کی گئی ہے۔

میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ لیبر ڈپارٹمنٹ میں کوئی بھی کام  کروانا ہو  تو وہاں رشوت دینی پڑتی ہے اور ایجنٹوں کے ذریعے ہی کام کروانا پڑتا ہے جو اپنے کام  کےتین سے پانچ ہزار روپئے لیتے ہیں۔میمورنڈم کے مطابق مزوروں کو گزشتہ تین سالوں سے کارڈ بھی فراہم نہیں کیا گیا ہے۔ جو پیسے شادی کی امدادی رقم کے طور پر دیے جاتے ہیں ان میں بھی 10/ہزار کی کٹوتی کی جارہی ہے۔

 سنگھا کی جانب سے ملٹی اسپیاشلٹی اسپتال کی مانگ: اسی میمورنڈم میں اتر کینرا کے انچارج وزیر مسٹر دیش پانڈے سے ضلع میں ملٹی اسپیاشلٹی اسپتال بنانے کی مانگ کی گئی ہے۔ضلع میں بڑھتے سڑک حادثات کی تعداد بتاتے ہوئے کہا گیا کہ یہاں کوئی بھی چھوٹا سا بھی سڑک حادثہ ہوتا ہے تو یہاں سے مینگلور یا پھر اڈپی بھیج دیا جاتا ہے،اس دوران کئی بار ایسا بھی ہوا ہے کہ اسپتال پہنچتے پہنچتے مریض دم ہی توڑ دیتا ہے۔

اس موقع پر سنگھا کے ضلعی صدر کمار نائک، نائب صدر کے ایم شریف، جنرل سیکریٹری سید علی مالکی، رام چندرا گوڈا، انتھونی جوجے اور دیگر افراد موجود تھے۔

x

Check Also

بھٹکل اوراطراف  کے طلبہ کے لیے سائنسی وتحقیقی مقابلوں کا ہوگا انعقاد

بھٹکل: 17 جولائی،2019 (پریس ریلیز) شہر بھٹکل کا معروف تعلیمی و فلاحی ...