بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / اتی کرم داروں کو اتحاد کے ساتھ اپنا احتجاج جاری رکھنا چاہئے؛ جسٹس ناگ موہن داس

اتی کرم داروں کو اتحاد کے ساتھ اپنا احتجاج جاری رکھنا چاہئے؛ جسٹس ناگ موہن داس

Print Friendly, PDF & Email

بھٹکل: 13 مئی، 19 (بھٹکلیس نیوز بیورو) ’’ساحلی علاقہ میں اتی کرم جگہوں کا حصول ایک بہت ہی بڑا مسئلہ بن گیا ہے جس کی ذمہ دار خود حکومت ہے، حلانکہ ملک کے دستور میں اس کا حل موجود ہے لیکن پھر بھی حکومت اس کو نافذ نہیں کر رہی ہے جس کے لیے اتی کرم داروں کو اتحاد کے ساتھ اپنا احتجاج جاری رکھنا چاہئے تاکہ انہیں ان کا حق مل سکے‘‘۔

ان خیالات کا اظہار کا جسٹس ناگ موہن نے کیا وہ یہاں بھٹکل کے کملاوتی رامناتھ شانبھاگ ہال میں منعقد ایک اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ جنگلاتی زمین اگر کم ہورہی ہے تو حکومت کو اس کے اسباب پر غور کرنا چاہئے کیوں کہ جنگلاتی زمین کے کٹاؤ کے اسباب بہت سارے ہیں جس میں سیلاب ، ریلوے لائن ، جنگل کی آگ اور سڑکوں کی توسیع وغیرہ شامل ہیں۔

انہوں نے اپنے خطاب کے آخر میں کہا کہ اتی کرم داروں کے پاس حق رائے دہی ایک اہم موقع ہوتا ہے جس میں وہ لوگ اپنے اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنے کارکن کو جتا کر اپنا کام کرسکتے ہیں۔

اس موقع پر  اتی کرم ہوراٹا سمیتی کے ضلعی صدر رویندرا ناتھ نائک نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور عوام سے کہا کہ اپنے حقوق پانے کے لئے  ہمیں عدالت کا دروازہ ہی کھٹ کھٹانا چاہئے۔ہوراٹا سمیتی بھٹکل تعلقہ صدر راما موگیر نے استقبال کیا۔ اجلاس میں  جناب عنایت اللہ شاہ بندری، منجو مراٹھی، دیوراج گونڈا، پانڈو نائک وغیرہ موجود تھے۔

x

Check Also

ساگر روڈ پر جنگلی خنزیروں نے عوام کو کر رکھا ہے پریشان؛ سڑکوں پر چلنا ہوا ہے مشکل

بھٹکل: 15 جولائی، 19 (بھٹکلیس نیوز بیورو) بھٹکل ٹی ایم سی حددود ...