بنیادی صفحہ / بھٹکل و اطراف / انجمن میں  تعلیم حاصل کرنے والے طلبہ کو فیس میں دی جارہی ہے رعایت: بقایا فیس میں بھی ہوگی رعایت

انجمن میں  تعلیم حاصل کرنے والے طلبہ کو فیس میں دی جارہی ہے رعایت: بقایا فیس میں بھی ہوگی رعایت

Print Friendly, PDF & Email

بھٹکل: 30 جون، 2021 (بھٹکلیس نیوز بیورو) "انجمن حامئی مسلمین کا مقصد ہے کہ کوئی بھی طالب علم تعلیم سے محروم نہ ہو اس لیے انجمن کی طرف سے طلبہ کے لیے  فیس میں رعایت کی گئی ہے اور جو فیس ادا نہیں کر پائیں گے انہیں  بھی مالی تعاون کیا جائے گا”۔ اس کی اطلاع صدر انجمن جناب مزمل قاضیا صاحب نے دی وہ آج یہاں انجمن کے ایڈمنسٹریٹیو بلاک میں منعقد اخباری کانفرنس میں میڈیا کے نمائندوں سے مخاطب تھے۔

انہوں نے اس کی تفصیلات دیتے ہوئے کہا کہ کویڈ سے پہلے جو پوری فیس لی جاتی تھی اس میں سال گذشتہ اور اس سال کے لیے رعایت کرتے ہوئے ستر فیصد  فیس لی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ اگر کسی نے  سال گذشتہ پوری فیس ادا کی ہے تو ان کو بھی بقیہ تیس فیصد فیس لوٹائی جائے گی اور جن کی باقی ہیں وہ بھی صرف ستر فیصد فیس ہی ادا کریں گے ۔

صدر انجمن نے کہا کہ اگر کسی طالب علم کے سرپرست  فیس ادا نہیں کرسکتے ہیں تو انہیں معافی دی جائے گی وہ  جنرل سکریٹری یا بورڈ سکریٹری سے رابطہ کر سکتے ہیں اور تحریری طور پر درخواست دے سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انجنئرنگ کالج میں امسال  صرف سالانہ 80 ہزار فیس لی جائے گی اور اس  میں حکومت کی فیس 20 ہزار  الگ سے  لی جائے گی۔ اس کے علاوہ سیول میکانیکل، الیکٹریکل شعبوں میں ایک لاکھ پچیس ہزار کے بجائے صرف پینسٹھ ہزار سالانہ فیس لی جائے گی، اس کے علاوہ جن طلبہ کا فیصد 90 سے زیادہ رہتا ہے ان کے لیے ہر شعبہ میں پانچ طلبہ کو پچاس فیصد فیس لے  داخلہ دیا جائے گا اورکمپیوٹر سائنس شعبہ میں انجمن سے سیکھ کر آئے ہوئے پانچ طلبہ کو ترجیح دی جائے گی۔

اس موقع پر انجمن کے جنرل سکریٹری جناب اسماعیل صدیق صاحب، ایڈیشنل جنرل سکریٹری جناب اسحاق شابندری وغیرہ موجود تھے۔

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*