بنیادی صفحہ / مصنف کی تحاریر : عمران خان ندوی

مصنف کی تحاریر : عمران خان ندوی

محسن کتابیں۔۔(۱۸)۔۔۔ مولانا سید ابو الاعلی مودودیؒ

مولانا سید ابوالاعلی مودودیؒ             ولادت: اورنگ آباد،/۳ رجب  ۱۳۲۱ھ ،مطابق،۲۵ / ستمبر۱۹۰۳ء             آبائی وطن دہلی تھا۔ پیدائش اورنگ آباد میں ہوئی، جہاں ان کے والد وکالت کرتے تھے۔ میٹرک تک وہاں تعلیم حاصل کی، پھر حیدر آباد میں ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔ ۱۶۔۔۔ تحریر: خواجہ غلام السیدین

خواجہ غلام السیدین             ۔ولادت:پانی پت،۵ /شعبان ۱۳۲۲ھ،/۱۶ اکتوبر  ۱۹۰۴ء۔             ۔۱۹۰۴ وطن پانی  پت نسلاً ایوبی انصاری، مولانا الطاف حسین حالی کے پر نواسے تھے۔ ان کے والد خواجہ غلام الثقلین اردو کے ممتاز لوگوں میں تھے۔ میٹرک تک ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔۱۵۔۔۔ تحریر : مولانا عبد السلام ندوی

مولانا عبدالسلام ندوی              ۔ولادت: علاء الدین پٹی (ضلع اعظم گڑھ، یوپی)۔              ۔۸ربیع الثانی ۱۳۰۰ھ، مطابق، /۱۶فروری۱۸۸۳ء۔              اعظم گڑھ کے رہنے والے تھے، ابتدائی فارسی کی تعلیم وطن میں پائی، عربی کی تعلیم متوسطات تک کانپور،آگرہ اور غازی ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔ ۱۴۔۔۔ تحریر: مولانا عبد العزیز میمن

مولانا عبدالعزیز میمن ولادت:راجکوٹ(کاٹھیاواڑ، گجرات) ۱۳ /صفرالمظفر۱۳۰۶؁ھ، مطابق ۲۳/اکتوبر۱۸۸۸؁ء راجکوٹ کی میمن برادری سے آپ کا تعلق تھا۔ لکھنو، دہلی اور رامپور کے اساتذہ سے علم حاصل کیا، ان کے اساتذہ میں شیخ محمدطیب مکی، ڈپٹی نذیر احمد اور مولانا ...

مزید پڑھیں »

اہل علم کی محسن کتابیں۔۔۔۱۳۔۔۔ مولانا شاہ حلیم عطا سلونی

مولانا شاہ حلیم عطاسلونی ولادت: سلون،(ضلع رائے بریلی،یوپی)  ۱۳۱۱ ھ،مطابق ۱۸۹۳ھ  سلون کے مشہور خانوادہ کریمیہ کے قابل فخر فرزند تھے۔ تین سو سال سے خانقاہ کریمیہ آباد ہے۔ نسلاً آپ فاروقی تھے۔ آپ نے اپنے چچا شاہ حسام عطا ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔ تحریر: مولانا اعزاز علی امروہوی۔۔۔ قسط ۰۳

             دارالعلوم دیوبند سے فارغ ہونے کے بعد حضرت شیخ الہند قدس سرہٗ نے نے مدرسہ نعمانیہ واقع پورینی ضلع بھاگلپور کے مدرس ادبی کے لئے مامور فرمایا، تو وہاں کچھ موقع مل گیا کہ قومی مدارس کی غیر درسی ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔ تحریر: مولانا اعزاز علی امروہوی۔۔۔ قسط ۰۲

             حفظ قرآن سے فراغت کے وقت میری عمر کیا تھی، مجھ کو صحیح یاد نہیں ہے، اس قدر ضرور یاد ہے، کہ بعض بعض لوگ میری موجودگی، میں میری طرف اشارہ کر کے فرمایا کرتے تھے کہ منشی جی(والد ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔ تحریر: مولانا اعزاز علی امرہوی۔ قسط ۰۱

مولانا اعزاز علی امروہوی             ولادت: بدایوں،یکم محرم ۱۳۰۱ھ مطابق /۲ نومبر ۱۸۸۳ء              مشہور تاریخی قصبہ امروہہ( ضلع مراد آباد )کے رہنے والے تھے، مولانا کی عمر ابھی بہت چھوٹی تھی کہ والد صاحب کا بسلسلۂ ملازمت شاہ جہاں ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۰۱۔ تحریر: پروفیسر سید نواب علی

پروفیسر سید نواب علی ولادت:لکھنؤ،۱۲۹۴ھ،مطابق ۱۸۷۷ء نیوتنی ضلع اناؤ اصل وطن تھا۔لکھنؤ میں پیدائش ہوئی،جہاں آپ کے والد فرخند علی رضوی وکالت کرتے تھے۔۱۸۹۲ء میں اناؤ ہائی اسکول سے میٹرک کیا،اور ۱۸۹۳ء میں کیننگ کالج لکھنؤ میں داخل ہوئے،اور ۱۹۰۰ء ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔ تحریر: مولانا سعید احمد اکبرآبادی

مولانا سعید احمد اکبرآبادی ولادت:آگرہ،۱۳۲۶ھ ،مطابق ۱۹۰۸ء مولانا سعید احمد اکبرآبادی کا آبائی وطن بچھرایوں ضلع مرادآباد تھا۔ان کے والد سرکاری ملازمت کی وجہ سے اکبرآباد (آگرہ) میں مقیم تھے،وہیں مولانا کی پیدائش ہوئی،اور اسی نسبت سے اکبر آبادی مشہور ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔ تحریر: مولانا سید طلحہ حسنی یم ۔ اے

مولانا سید طلحہ حسنی ایم۔اے             ولادت:ٹونک،۱۳۰۸ھ ، مطابق ۱۸۹۰ء             آپ رائے بریلی کے قطبی حسنی سادات میں سے تھے۔آپ کے والد سید محمد حضرت سید احمد شہیدؒ کے بھانجے مولوی سید محمد علی مصنف’’مخزن احمدی‘‘ کے حقیقی پوتے ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔ تحریر: مولانا بدر الدین علوی

مولانا بدرالدین علوی             ولادت:علی گڑھ،۱۳۱۰ھ،مطابق ۱۸۹۳ء             معزز علوی سادات سے آپ کا تعلق تھا۔شروع میں انگریزی تعلیم حاصل کی،عربی بھی ساتھ ساتھ شروع کردی تھی،لیکن ۱۹۱۰ء میں پنجاب یونیورسٹی کے انٹرنس کے امتحان میں ناکامی کے بعد پوری ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔تحریر۔۔۔ میاں بشیر احمد،آکسن

 میاں بشیر احمد، آکسن ولادت : لاہور رمضان ۱۰-۱۳۱۰ھ مطابق مارچ ۱۰- ۱۸۹۳ء باغبان پورہ لاہور کے رہنے والے تھے۔ابتدائی تعلیم گاؤں میں حاصل کرنے کے بعد سنٹرل ماڈل اسکول سے  ۱۹۰۸ء میں انٹرنس کیا،۱۹۱۰ء میں گورنمنٹ کالج لاہور سے ...

مزید پڑھیں »

محسن کتابیں۔۔۔03۔۔۔ تحریر: مولانا مناظر احسن گیلانی

جاننے والے،دیوبند وخیر آبادی لاگ ڈانٹ سے واقف ہیں۔سینے پر پتھر رکھ کر اس مدرسے میں داخل ہوا۔خدا جزائے خیر دے غزالی کو،اسیرِابن سینا وباقر کو،اس نے حضرت شیخ الہند کے حلقۂ حدیث میں پہنچا دیا۔کچھ دن کشمکش میں گزرے،عجب ...

مزید پڑھیں »