بنیادی صفحہ / مصنف کی تحاریر : ڈاکٹرحنیف شباب

مصنف کی تحاریر : ڈاکٹرحنیف شباب

لیجیے !بھٹکل میں بھگوا سیاست کا جنگی بگل بجادیاگیا ۔۔!!از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. میں نے اپنے سابقہ مضمون میں ریاست کرناٹکا کے بدلتے سیاسی منظر نامے اورچند مہینوں میں درپیش اسمبلی انتخابی ڈرامے کی امکانی عکاسی کی تھی اور یہ اشارہ کیا تھا کہ اس بار بھگوا بریگیڈ ...

مزید پڑھیں »

کرناٹکا میں سیاسی ناٹک کابدلتا منظر نامہ اور خطرے کی گھنٹیاں !۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  کرناٹکا اسمبلی الیکشن کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں سیاسی اونٹ بھی اپنی کروٹیں بدلنے لگے ہیں۔سیاسی ناٹک کا اسٹیج پوری طرح سج چکا ہے اور تشدد، سنسنی ، ہنگامہ آرائی، الزامات وبہتان ...

مزید پڑھیں »

بھٹکل میں پروان چڑھتاہائی فائی شادی کلچر!۔۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. شہر بھٹکل الحمدللہ ایک زمانے سے غالب اسلامی تشخص والے اپنے مخصوص کلچر اور معاشرے کے لئے معروف رہا ہے۔ اس میں یہاں کی نوائط برادری میں موجود پابندئ صوم وصلوٰۃ، خیر خواہی، ملّی اخوت،علم ...

مزید پڑھیں »

کیا کرناٹکامیں لسانی اورصوبائی جنون ،نئے طوفان کا پیش خیمہ ہے ؟!(تیسری اور آخری قسط )۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آزادی کے بعد کچھ عرصے تک جنوبی ہند میں وقفے وقفے سے ہندی مخالف مظاہرے ہوتے رہے اور پھر بعد میں یہ طوفان کچھ تھم سا گیا تھا۔مگرآج کل ایک بار پھر منافرت اور مخالفت کے اس سمندر میں نئی ...

مزید پڑھیں »

کیا کرناٹکامیں لسانی اورصوبائی جنون ،نئے طوفان کا پیش خیمہ ہے ؟ (دوسری قسط)۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  ہندی زبان کو قومی زبان(راشٹر بھاشا) قرار دینے اوراسے پورے ملک میں نافذکرنے کا جو معاملہ ہے وہ ابتدا ہی سے متنازعہ رہا ہے۔1950میںآئین ہند کی منظوری کے ساتھ یہ طے ہواتھا کہ آئندہ 15برسوں ...

مزید پڑھیں »

کیا کرناٹکامیں لسانی اورصوبائی جنون ،نئے طوفان کا پیش خیمہ ہے ؟! ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  ہندوستان کی جنوبی ریاستوں میں لسانی اور صوبائی عصبیت اور شمالی ریاستوں سے اورخاص کر ہندی زبان سے چِڑ کوئی نئی بات نہیں ہے۔کرناٹکا، کیرالہ، آندھرا پردیش اور تملناڈوکے علاوہ بنگال، آسام، بہار، مہاراشٹرا جیسی ...

مزید پڑھیں »

فسطائیت کا گھناؤنا چہرہ۔۔گؤ آتنک واد اور وزیراعظم کی پینترے بازی! (تیسری اور آخری قسط) ۔۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  گزشتہ قسط میں اس بات کا سرسری جائزہ لیا گیا تھا کہ سابقہ ڈھائی تین سال کے عرصے میں مودی راج میں گائے ماتا کے نام پر دہشت پھیلانے والے گؤ آتنکیوں نے سوچی سمجھی ...

مزید پڑھیں »

فسطائیت کا گھناؤنا چہرہ۔۔۔ہجوم کے ہاتھوں”انصاف اور قتل "کا نیا سلسلہ! (دوسری قسط)۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  گزشتہ قسط میں ہم نے فسطائیت یا فاشزم کی تعریف ، اجزائے ترکیبی اور بنیادی خصوصیات کا تفصیلی جائزہ لیا جس کی روشنی میں یہ بات صاف ہوگئی کہ ہندوستان کا موجودہ نظام حکومت جمہوریت ...

مزید پڑھیں »

فسطائیت کا گھناؤنا چہرہ۔۔۔ہجوم کے ہاتھوں”انصاف اور قتل "کا نیا سلسلہ! ۔۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  [email protected] آج ہندوستانی سیاست نے جو رخ اختیار کیا ہے اور اکثریتی فرقے کی ایک مخصوص فکر اور سوچ نے اقلیتوں کے خلاف جبر و استبداد کا جوبازار گرم کر رکھا ہے ، اور اس ...

مزید پڑھیں »

دعوتی کام کی پبلسٹی کرنے والو جاگو!۔۔بُرے دن آنے والے ہیں!! ۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  ایک مسلمان کے لئے اپنے دین پر قائم رہنا احسن بات ہے ، لیکن دین کے قیام کے لئے غیر مسلموں میں دعوتی کام کرنامستحسن ترین اور دین کا مطلوب و مقصود کام ہے، جس ...

مزید پڑھیں »

مذبح کے لئے جانوروں کی فروخت پر پابندی۔۔ایک تیر سے کئی شکار (دوسری قسط)۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. یہ جو ذبح کرنے کے لئے گائے کے سنتان سے منسلک تمام بڑے جانوروں کے ساتھ اونٹ کو عام مارکیٹ میں فروخت کرنے کی پابندی کا قانون لاگو کیا جانے والا ہے اس پر ملک ...

مزید پڑھیں »

مذبح کے لئے جانوروں کی فروخت پر پابندی۔۔ایک تیر سے کئی شکار ۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. چلئے خدا خدا کرکے ہندوستان میں کسی کے تو اچھے دن آگئے!خواہ مخواہ لوگ چیخ وپکار مچائے ہوئے تھے کہ مودی سرکار نے اچھے دن کا جو وعدہ کیا تھا، وہ کبھی پورا ہونے والا ...

مزید پڑھیں »

امداد کیجیے، مگر غریبوں کو رُسوا تو نہ کیجیے!۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. دنیا میں انسانوں کے پاس مال و زر کی کمی و بیشی اورمعیشت کی مختلف تقسیم اللہ تعالیٰ کے طے کردہ نظام کے مطابق ہوتی ہے۔اگرکسی کے پاس مال کی زیادتی اور خوشحالی کا سامان ...

مزید پڑھیں »

پرسنل لاء صرف مسلمانوں کا مسئلہ تھوڑی ہے؟ !(تیسری اور آخری قسط)۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  ایک طرف ایک ملک ،ایک طرح کی شہریت اور ایک قانون کے نام پرسرکار کی طرف سے ملک میں یونیفارم سول کوڈ کے لئے راہیں ہموار کرنے اور ماحول گرمانے کا کام ہورہا ہے۔ تو ...

مزید پڑھیں »