بنیادی صفحہ / مصنف کی تحاریر : ڈاکٹرحنیف شباب

مصنف کی تحاریر : ڈاکٹرحنیف شباب

پچیس سال پہلے کی وہ سرد راتیں اور جیل یاترا (پہلی قسط)۔۔۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  جب بھی دسمبر کے مہینے میں رات دیر گئے تک کچھ علمی و ادبی کام ختم کرکے میں گھر کے لیے نکلتا ہوں اور شدید سردی کا عالم ہوتا ہے ۔تو یادوں کے جھروکے میں ...

مزید پڑھیں »

بھٹکل میں سیاسی گرگٹ کے بدلتے رنگ۔۔جاری ہے اندرونی جنگ!….. از: ڈاکٹر حنیف شباب (دوسری اور آخری قسط )

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  بات چل رہی تھی بھٹکل میں سیاسی گرگٹ کے بدلتے رنگوں کی۔جس میں خاص اور نمایاں پہلومسلم امیدوار میدان میں اتارنے کے حق میں اور موجودہ ایم ایل اے کی مخالفت میں بنایا جارہا ماحول ...

مزید پڑھیں »

بھٹکل میں سیاسی گرگٹ کے بدلتے رنگ۔۔جاری ہے اندرونی جنگ! (پہلی قسط )از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  میں نے سابقہ مضمون میں بھٹکل میں مسلم امیدوار کے انتخابی اکھاڑے میں اتارنے کے سلسلے میں کچھ تجزیہ پیش کیاتھا اور اپنے طور پر ممکنہ کوشش کی تھی کہ اس سے ہمارے سماجی قائدین ...

مزید پڑھیں »

بھٹکل حلقے میں کیا مسلم امیدوار کی جیت حقیقت بن سکتی ہے؟۔۔۔۔از:  ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  [email protected] کرناٹکا اسمبلی الیکشن کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں، سیاسی گہماگہمی بھی اپنی رفتار پکڑنے لگی ہے۔ الیکشن کے موسم میں ایک پارٹی سے دوسری پارٹی کے کیمپ کی طرف ہجرت کرنے ...

مزید پڑھیں »

بھٹکل نامدھاری سنگھا اپنے لیڈروں کی حمایت میں۔۔کیا ہم ایسا نہیں کرسکتے؟! )دوسری اور آخری قسط)۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. بھٹکل اسمبلی حلقے کا نامدھاری طبقہ بحیثیت مجموعی ایک زمانے سے بظاہر ہی سہی کانگریس، جنتا دل اور اس طرح کی دوسری سیکیولر پارٹیوں سے وابستگی کے لئے جاناجاتارہا ہے۔لیکن پولیس کے ہاتھوں اس طبقے ...

مزید پڑھیں »

بھٹکل نامدھاری سنگھا اپنے لیڈروں کی حمایت میں۔۔کیا ہم ایسا نہیں کرسکتے؟! (پہلی قسط)۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. کچھ دنوں پہلے بلدیہ کی دکانوں کی نیلامی سے شروع ہونے والا تنازعہ اور اس کے بعد بگڑتا ہوا ماحول ابھی سرد ہوتا نظر نہیں آتا۔دن بدن اس کے سیاسی، سماجی، فرقہ وارانہ اور قانونی ...

مزید پڑھیں »

منافرت پھیلانے والے بھگوا لیڈروں کے خلاف مقدمات ۔۔حقائق اور نتائج۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. [email protected] کرناٹکا اسمبلی الیکشن کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں، زعفرانی کیمپ میں شطرنج کی بساط پر چلنے کے لئے چالوں اور سازشوں کے منصوبے تیار ہونے لگے ہیں اور اس پر پورے ...

مزید پڑھیں »

لیجیے !بھٹکل میں بھگوا سیاست کا جنگی بگل بجادیاگیا ۔۔!!از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. میں نے اپنے سابقہ مضمون میں ریاست کرناٹکا کے بدلتے سیاسی منظر نامے اورچند مہینوں میں درپیش اسمبلی انتخابی ڈرامے کی امکانی عکاسی کی تھی اور یہ اشارہ کیا تھا کہ اس بار بھگوا بریگیڈ ...

مزید پڑھیں »

کرناٹکا میں سیاسی ناٹک کابدلتا منظر نامہ اور خطرے کی گھنٹیاں !۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  کرناٹکا اسمبلی الیکشن کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں سیاسی اونٹ بھی اپنی کروٹیں بدلنے لگے ہیں۔سیاسی ناٹک کا اسٹیج پوری طرح سج چکا ہے اور تشدد، سنسنی ، ہنگامہ آرائی، الزامات وبہتان ...

مزید پڑھیں »

بھٹکل میں پروان چڑھتاہائی فائی شادی کلچر!۔۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. شہر بھٹکل الحمدللہ ایک زمانے سے غالب اسلامی تشخص والے اپنے مخصوص کلچر اور معاشرے کے لئے معروف رہا ہے۔ اس میں یہاں کی نوائط برادری میں موجود پابندئ صوم وصلوٰۃ، خیر خواہی، ملّی اخوت،علم ...

مزید پڑھیں »

کیا کرناٹکامیں لسانی اورصوبائی جنون ،نئے طوفان کا پیش خیمہ ہے ؟!(تیسری اور آخری قسط )۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آزادی کے بعد کچھ عرصے تک جنوبی ہند میں وقفے وقفے سے ہندی مخالف مظاہرے ہوتے رہے اور پھر بعد میں یہ طوفان کچھ تھم سا گیا تھا۔مگرآج کل ایک بار پھر منافرت اور مخالفت کے اس سمندر میں نئی ...

مزید پڑھیں »

کیا کرناٹکامیں لسانی اورصوبائی جنون ،نئے طوفان کا پیش خیمہ ہے ؟ (دوسری قسط)۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  ہندی زبان کو قومی زبان(راشٹر بھاشا) قرار دینے اوراسے پورے ملک میں نافذکرنے کا جو معاملہ ہے وہ ابتدا ہی سے متنازعہ رہا ہے۔1950میںآئین ہند کی منظوری کے ساتھ یہ طے ہواتھا کہ آئندہ 15برسوں ...

مزید پڑھیں »

کیا کرناٹکامیں لسانی اورصوبائی جنون ،نئے طوفان کا پیش خیمہ ہے ؟! ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  ہندوستان کی جنوبی ریاستوں میں لسانی اور صوبائی عصبیت اور شمالی ریاستوں سے اورخاص کر ہندی زبان سے چِڑ کوئی نئی بات نہیں ہے۔کرناٹکا، کیرالہ، آندھرا پردیش اور تملناڈوکے علاوہ بنگال، آسام، بہار، مہاراشٹرا جیسی ...

مزید پڑھیں »

فسطائیت کا گھناؤنا چہرہ۔۔گؤ آتنک واد اور وزیراعظم کی پینترے بازی! (تیسری اور آخری قسط) ۔۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  گزشتہ قسط میں اس بات کا سرسری جائزہ لیا گیا تھا کہ سابقہ ڈھائی تین سال کے عرصے میں مودی راج میں گائے ماتا کے نام پر دہشت پھیلانے والے گؤ آتنکیوں نے سوچی سمجھی ...

مزید پڑھیں »