بنیادی صفحہ / مصنف کی تحاریر : ڈاکٹرحنیف شباب

مصنف کی تحاریر : ڈاکٹرحنیف شباب

وہ رات۔۔۔ جب رکن اسمبلی ڈاکٹر چترنجن کا قتل ہوا! (تیسری قسط………..از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. (….گزشتہ سے پیوستہ) جب ہمیں دوسرے کمرے میں منتقل کیا گیاتو جنرل سکریٹری تنظیم جناب یحییٰ دامودی نے بتایا کہ رات جس وقت پولیس نے مجھے اپنے گھر سے اٹھایاتھا تو اسی وقت انہوں نے ...

مزید پڑھیں »

وہ رات۔۔۔ جب رکن اسمبلی ڈاکٹر چترنجن کا قتل ہوا (دوسری قسط) ۔۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. وہ 10اپریل 1996کی ایک عام رات تھی۔ ڈاکٹر چترنجن کی جیت کو ابھی سال دیڑھ سال ہی ہواتھا۔ چونکہ پارلیمانی انتخاب کی مہم چل رہی تھی اس لئے حالات کا جائزہ لینے کے لئے اوربھٹکل ...

مزید پڑھیں »

وہ رات۔۔۔ جب رکن اسمبلی ڈاکٹر چترنجن کا قتل ہوا! (پہلی قسط)۔۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے……….. وہ سن 1996کے پارلیمانی انتخابات کی گہماگہمی زمانہ تھا۔ 1993کے بھٹکل فسادات کے پس منظر میں ہندوتوا لابی پوری طرح ساحلی علاقے میں سرگرم ہو چکی تھی۔ فسادات کے بعد ہونے والے اسمبلی الیکشن میں ...

مزید پڑھیں »

واہ! کیا بات ہے !….کمار سوامی نے بھٹکل میں لگایا موقع دیکھ کر چوکا!!۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے پوری ریاست کرناٹکا میں سیاسی اونٹ دھیرے دھیرے کروٹیں بدلنے لگا ہے۔ بھٹکل اسمبلی حلقے کی اپنی ایک الگ اہمیت ہے کیونکہ پورے ساحلی علاقے میں بلکہ ریاست کرناٹکا میں بی جے پی کو سیاسی ...

مزید پڑھیں »

کیااسکولوں میں فیل نہ کرنے کی پالیسی معیارِتعلیم کو برباد کررہی ہے؟۔۔۔۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  [email protected] ایک طرف موسم گرما کی آمدآمد ہے اور دوسری طرف اسکولوں کے تعلیمی سال کا اختتام قریب آگیا ہے اور نئے داخلوں کے موسم کا بھی آغازہوچکا ہے ۔ جہاں تک بڑے شہروں کا ...

مزید پڑھیں »

ایڈوکیٹ شاہد اعظمی اور نوشاد قاسمجی کی شہادت رنگ لارہی ہے ! (چوتھی اور آخری قسط)۔۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی  ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ [email protected] ایڈوکیٹ نوشاد اور شاہد اعظمی کی شہادتوں کے بعدقانون کے جبر وستم سے بے گناہ مسلم نوجوانوں کو رہائی دلانے کی منظم کوششیں ملک کے مختلف مقامات پرتیز سے تیز تر ہوگئیں۔ٹاڈا اور پوٹا ...

مزید پڑھیں »

ایڈوکیٹ شاہد اعظمی اور نوشاد قاسمجی کی شہادت رنگ لارہی ہے ! (تیسری قسط (از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  [email protected] یہ توایک کھلی ہوئی سچائی ہے کہ مسلم نوجوانوں کے لئے انصاف کی جنگ لڑنے والے وکلاء کو انڈر ورلڈ کے سہارے جان سے مارڈالنے کا سلسلہ ایک سوچا سمجھا منصوبہ ہے جس کے ...

مزید پڑھیں »

ایڈوکیٹ شاہد اعظمی اور نوشاد قاسمجی کی شہادت رنگ لارہی ہے ! (دوسری قسط)۔۔۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے۔۔۔۔۔۔۔ [email protected] میں نے سابقہ قسط میں اشارہ کیا تھاکہ مسلم نوجوانوں کے حق میں قانون کے بے جا استعمال کے خلاف شاہد اعظمی نے ایک مہم چھیڑ رکھی تھی۔ حقیقت یہ ہے کہ اس میں ...

مزید پڑھیں »

ایڈوکیٹ شاہد اعظمی اور نوشاد قاسمجی کی شہادت رنگ لارہی ہے ! (پہلی قسط)۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  [email protected] 11فروری کوایڈوکیٹ شاہد اعظمی شہید کی آٹھویں برسی تھی۔ اس موقع پر ’دی وائر ‘ میں شاہد پرایک خصوصی تحریرپڑھنے کے بعد تحریک ملی کہ ملک کی جیلوں میں اپنی جوانی کے سنہرے دور ...

مزید پڑھیں »

اب یہ ہانڈی بھی منکال کے سر پر نہ پھوڑیں تو پھرکیاکریں؟!۔۔۔ از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  آخر وہی ہوا جس کا اندیشہ جاگتے ذہن اور کھلی آنکھوں سے جائزہ لینے والے ظاہر کررہے تھے کہ اس مرتبہ اسمبلی الیکشن میں ہمارے مرکزی ادارے مجلس اصلاح و تنظیم کی قیادت کو بھاری ...

مزید پڑھیں »

پچیس سال پہلے کی وہ سرد راتیں اور جیل یاترا !! (پانچویں اور آخری قسط)۔۔از:ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  [email protected] غالباً جیل میں وہ چھٹا یا ساتواں دن تھاجب ہمارا انتظار اور اضطراب ختم ہوگیا اور ہمیں یہ خوشخبری مل گئی کہ ہماری ضمانت ہوگئی ہے۔ بھٹکل سے ہمیں چھڑانے اور اپنے ساتھ لے ...

مزید پڑھیں »

پچیس سال پہلے کی وہ سرد راتیں اور جیل یاترا ! (تیسری قسط)۔۔۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  [email protected] تعلقہ میجسٹرئٹ کے پاس پیشی کے بعد جب ہمیں واپس سب جیل کے ورانڈے میں لایا گیاتو پولیس کی اجازت ملنے پر ہم نے ہوٹل سے ناشتہ منگوایا۔ اور ایک دوسرے کے ساتھ ہنسی ...

مزید پڑھیں »

پچیس سال پہلے کی وہ سرد راتیں اور جیل یاترا!!(دوسری قسط)۔۔۔۔۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ 

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  [email protected] جیسا کہ میں نے اپنے مضمون کی پچھلی قسط میں کہا تھاکہ پولیس نے براہ راست ایس پی اوم پرکاش کی نگرانی میں فسادات میں ملوث ہندو نوجوانوں ، ہندو جاگرن ویدیکے کے سرگرم ...

مزید پڑھیں »

پچیس سال پہلے کی وہ سرد راتیں اور جیل یاترا (پہلی قسط)۔۔۔۔۔از: ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے………..  جب بھی دسمبر کے مہینے میں رات دیر گئے تک کچھ علمی و ادبی کام ختم کرکے میں گھر کے لیے نکلتا ہوں اور شدید سردی کا عالم ہوتا ہے ۔تو یادوں کے جھروکے میں ...

مزید پڑھیں »