بنیادی صفحہ / مصنف کی تحاریر : حفیظ نعمانی (صفحہ 3)

مصنف کی تحاریر : حفیظ نعمانی

یوپی کے عظیم اتحاد کی حفاظت سب مل کر کریں گے۔۔۔۔از:حفیظ نعمانی

اترپردیش میں عظیم اتحاد کے خاکہ کی شہرت ایسی گولی نہیں ہے جسے سب حلق سے اتارلیں، اس اتحاد کے ایک فریق کانگریس کے اہم لیڈر کپل سبل نے کل منورنجن بھارتی سے صاف الفاظ میں کہا کہ ان کے ...

مزید پڑھیں »

داغی ممبر حکومت اور سپریم کورٹ ۔۔۔از: حفیظ نعمانی

پورے سال میں عید کا دن ایسا ہوتا ہے کہ میرے اپنے بیٹے بیٹیاں، پوتے پوتیاں، نواسے نواسیاں اور پرنواسے پرنواسیاں جو ہندوستان میں ہیں وہ میرے پاس ہوتے ہیں۔ ان میں وہ بہوئیں بھی شامل ہیں جن کو بہو ...

مزید پڑھیں »

کیا اللہ کریم نے دوسرا کرکرے پیدا کردیا۔۔۔۔۔۔از:حفیظ نعمانی

ممبئی میں اے ٹی ایس نے وہی کیا ہے جو اسی شہر میں اس سے پہلے ایک بہت نیک نام پولیس افسر ہیمنت کرکرے نے کیا تھا۔ اے ٹی ایس نے بھی مسٹر کرکرے کی طرح دایاں بایاں دیکھ کر ...

مزید پڑھیں »

یادیں یادیں لہو میں ڈوبی یادیں۔۔۔۔از: حفیظ نعمانی

ہوسکتا ہے میری طرح اور بھی کچھ لوگ ہوں جو سوچ رہے ہوں کہ پنڈت نہرو نے جو انتقال سے صرف چند دن پہلے شیخ محمد عبداللہ کو رِہا کراکے دہلی بلایا اور اپنا کوئی پیغام لے کر پاکستان بھیجا ...

مزید پڑھیں »

تری ذہنیت کا غم ہے غم بال و پر نہیں ہے۔۔۔۔۔ از:حفیظ نعمانی

جس خبر میں ایسا کوئی اشارہ ہو کہ مسلمانوں کو نقصان ہوگا یا وہ پریشان ہوں گے اسے گلے میں ڈھول ڈال کر ملک بھر میں بجانے کا ایک پارٹی نے اپنا دھرم بنا لیا ہے۔ شرم کی بات یہ ...

مزید پڑھیں »

عمران کی تاج پوشی سے پہلے ہی مخالف میدان میں۔۔۔۔۔۔از:حفیظ نعمانی

ہندوستان اور پاکستان میں 71 سال کے بعد بھی بہت سی باتیں مشترک ہیں۔ ہندوستان میں بھی ہر الیکشن کے بعد حکمراں پارٹی پر بے ایمانی کرنے اور الیکشن کمیشن پر نظر انداز کرنے کا الزام لگایا جاتا ہے بلکہ ...

مزید پڑھیں »

ہندوستان سے دوستی کی شرط کشمیر کو بھول جاؤ۔۔۔۔۔از:حفیظ نعمانی

کشمیر کا مسئلہ تین فریقوں کے درمیان کا نہیں دو فریقوں کا ہے۔ راجہ کے زمانہ میں کشمیر کے سب سے بڑے لیڈر شیخ محمد عبداللہ اور غلام عباس تھے۔ شیخ صاحب کی دوستی پنڈت نہرو سے تھی اور غلام ...

مزید پڑھیں »

تصویر کا دوسرا رُخ۔۔۔۔۔۔۔۔از: حفیظ نعمانی

ت پاکستان کے بننے والے وزیراعظم عمران خان نے اپنی پارٹی کی اکثریت کی خبر کے بعد جو پہلا خطاب کیا ہے اس سے صاف محسوس ہورہا تھا کہ وہ خوشی سے اپنے قابو میں نہیں ہیں۔ انہوں نے سب ...

مزید پڑھیں »

اچھے تو کیا آئے برے بلکہ زیادہ برے دن آگئے۔۔۔۔۔ از:حفیظ نعمانی

وزیراعظم کو یاد ہوگا کہ چند روز پہلے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس نے بڑے درد کے ساتھ فرمایا تھا کہ۔ اس دیش میں ہو کیا رہا ہے؟ ان کی فکر بھیڑ کی حکمرانی اور دو دو کوڑی کے آدمی ...

مزید پڑھیں »

اندھیرے میں اُجالے کی کرن۔۔۔۔۔از:حفیظ نعمانی

موجودہ حکومت پر عدم اعتماد کی تحریک بظاہر بہت بڑے فرق سے ناکام ہوگئی لیکن جو ہوا اس سے اندازہ نہیں یقین ہے کہ اس کے ذریعہ جو حاصل کرنا تھا وہ کم از کم کانگریس کو حاصل ہوگیا۔ صرف ...

مزید پڑھیں »

میں تمہیں کیسے بتاؤں کیا کہوں۔۔۔۔۔ از:حفیظ نعمانی

کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے مسلم دانشوروں کے ساتھ دو گھنٹے کی ایک ملاقات میں ’’ہاں کانگریس مسلمانوں کی پارٹی ہے‘‘ کہا یا نہیں کہا اس پر بلاوجہ کی بحث چھڑ گئی ہے۔ اگر انہوں نے جوش میں آکر ...

مزید پڑھیں »

جو نوکر کو بگاڑے گا وہ خود کل پچھتائے گا۔۔۔۔۔۔۔از:حفیظ نعمانی

دہلی کی نازک حکومت اور مرکز کی دیوقامت حکومت کے درمیان تنازعہ اس وقت کا نہیں ہے جب نریندر مودی صاحب وزیراعلیٰ تھے بلکہ اس وقت کا ہے جب وہ 280 سیٹیں جیت کر ایک مضبوط حکومت بنا چکے تھے ...

مزید پڑھیں »

ان تہی دستوں کے ہاتھوں میں نہ چادر ہے نہ خاک۔۔۔۔ از: حفیظ نعمانی

وزیراعظم کے لئے ہر گٹھ بندھن کی خبر ایسی ہوتی ہے جیسے ملک پر کسی نے حملہ کردیا ہو۔ وہ فوراً اقتدار کی لالچ کا الزام لگا دیتے ہیں اور محاذ بنانے کی کوشش کرنے والے لیڈروں کو کتابلی سانپ ...

مزید پڑھیں »

جو جان بوجھ کر کرے اُسے کیا سمجھانا۔۔۔۔۔۔از: حفیظ نعمانی

یہ آج کی بات نہیں، کئی دن پرانی ہے کہ مسٹر اسد الدین اویسی نے ہاپوڑ کے ایک جلسہ میں تقریر کرتے ہوئے کہا تھا کہ میں بیٹر کے مسلمانوں سے یہ نہیں کہتا کہ وہ یہاں بیٹھ کر آنسو ...

مزید پڑھیں »