بنیادی صفحہ / مصنف کی تحاریر : اطھرہاشمی

مصنف کی تحاریر : اطھرہاشمی

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ خاصا خاصّہ۔۔۔ تحریر: اطہر ہاشمی

کچھ الفاظ ایسے ہیں جن کے بارے میں کئی بار توجہ دلائی گئی ہے، لیکن تحریر و تقریر میں غلط ہی استعمال ہورہے ہیں۔ تحریر سے مراد اخبارات، اور تقریر سے اشارہ ٹی وی چینلز کی طرف ہے۔ مثلاً ایک ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ سَیر، سیر اور سِیر۔۔۔ تحریر: اطہر ہاشمی

ایک قاری نے استفسار کیا ہے کہ پچھلے شمارے میں لاش اور نعش کا فرق تو سمجھ میں آگیا، لیکن یہ ’’بنات النعش‘‘ کیا ہے؟ بنات تو لڑکیوں کو کہتے ہیں، تو پھر نعش کی لڑکیاں کہاں سے آگئیں؟ انہوں ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ پول کھلتی ہے یا کھلتا ہے؟۔۔۔ تحریر: اطہر ہاشمی

ایک ٹی وی چینل پر خاتون کسی مقابلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہہ رہی تھیں ’’ہارنا ایک نظر نہ بھایا‘‘۔ محاورہ ہے ’ایک آنکھ نہ بھانا‘۔ محاوروں میں تبدیلی نہیں کی جاتی، گو کہ نظر کا تعلق بھی آنکھ ہی ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ خط و کتابت اور پتہ۔۔۔ تحریر: اطہر علی ہاشمی

امریکہ سے خوش فکر شاعر غالب عرفان نے پچھوایا ہے کہ کیا ’’کمرۂ امتحان‘‘ کی ترکیب درست ہے؟ ہم چونکہ بار بار کمرۂ امتحان میں داخل ہوچکے ہیں اس لیے ہمارے خیال میں تو یہ ترکیب صحیح ہے، یہ اور ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ یہ مشتری کون ہے؟۔۔۔ تحریر: اطہر علی ہاشمی

 ایک قاری نے سوال کیا ہے کہ اداریے میں ’’دو الفاظ ’کہہ ومہ‘ پڑھے، لیکن ان کا استعمال سمجھ میں نہیں آیا، گوکہ ان دو لفظوں کے معانی معلوم ہیں یعنی کہہ جیسے کہنا۔ ایک شعر ہے:۔ مجھ سے مت ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ خواجہ سرا کی وبا۔۔۔ تحریر :اطہر ہاشمی

کچھ برقی اور ورقی لطیفے۔ آج کسی چینل کا نام کیا دینا، لیکن خبر عجیب ہے اور سوشل میڈیا پر اس کا چرچا بھی ہے۔ خبریں سنانے والی خاتون نے یہ تشویش ناک خبر دی کہ چمن میں خواجہ سرا ...

مزید پڑھیں »

خبرلیجے زباں بگڑی۔۔۔ بنگالی ’ج‘ کو ’ز ‘سے بدل دیتے ہیں۔۔۔ تحریر: اطہر ہاشمی

پیر 13 جنوری کے تمام اخبارات میں، اور نیوز چینلز پر بھی بنگلادیش کرکٹ بورڈ کے صدر کا نام ’نظم الحسن‘ دیا گیا ہے۔ ہمارے نوجوان صحافیوں کو شاید یہ معلوم نہیں کہ بنگالی میں ’ج‘ ’ز‘ یا ’ظ‘ (Z) ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ بھیڑ کا چھتہ۔۔۔ تحریر: :اطہر ہاشمی

گزشتہ کالم (3 تا 9جنوری) میں ہم نے استادِ محترم اور ماہرِ لسانیات غازی علم الدین کے مضمون کے عنوان کے حوالے سے ’’اہمال‘‘ کا مطلب معلوم کیا تھا اور اپنے طور پر اس کا مطلب نکال لیا تھا۔ پروفیسر ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ جنگل میں منگل۔۔۔ تحریر: اطہر علی ہاشمی

۔’’جنگل میں منگل‘‘ عام محاورہ ہے، لیکن منگل ہی کیوں؟ بدھ، جمعرات یا جمعہ کیوں نہیں؟ بلکہ ہونا تو اتوار چاہیے کہ ہم مغرب کی تقلید میں اتوار کی چھٹی کرتے ہیں اور جہاں تک ممکن ہو تفریح کرتے ہیں ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ خود مختیاری۔۔۔ تحریر: اطہر علی ہاشمی

۔14 دسمبر کو صبح ہی صبح ایک قاری جناب ابوالقاسم کا فون آگیا۔ جیسا اُن کا نام ہے ویسی ہی آواز بھی زوردار ہے۔ انھیں کبھی دیکھا نہیں، بس سنا ہی سنا ہے اور وہ بھی اُس وقت جب کہیں ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ دلی کی عدالت بمقابلہ اردو۔۔۔ تحریر: اطہر علی ہاشمی

اردو زبان ہندوستان میں پیدا ہوئی، وہیں پلی بڑھی۔ دہلی، لکھنؤ اس کے بڑے دبستان سمجھے جاتے تھے۔ لیکن اب یہیں اس کو ’’ستی‘‘ کیا جارہا ہے۔ گزشتہ دنوں دہلی کی عدالت نے پولیس ایف آئی آر میں اردو کے ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ نیا کٹّا کھولنا۔۔۔ تحریر: اطہر علی ہاشمی

ایک باراں دیدہ سیاست دان نے گزشتہ دنوں مشورہ دیا ہے کہ ’’نیا کٹّا‘‘ نہ کھولا جائے۔ یہ کٹّا کون ہے جو پہلے کبھی ہٹا، کٹا تھا… اس کی تفصیل میں جاکر ہم کوئی سیاسی کٹا نہیں کھولنا چاہتے، چنانچہ ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ ٹڈیوں کی کڑھائی۔۔۔ تحریر: اطہر ہاشمی

گزشتہ دنوں کراچی پر بھی ٹڈی دل کا حملہ ہوا تو سندھ کے وزیر زراعت نے مشورہ دیا کہ لوگ ٹڈیاں پکڑ کر ان کی بریانی بنائیں، کڑاہی بنا کر کھائیں۔ اُمید ہے کہ انہوں نے خود بھی اس پر ...

مزید پڑھیں »

خبر لیجے زباں بگڑی۔۔۔ پَل، پِل اور پُل۔۔۔ تحریر: اطہر ہاشمی

 گزشتہ دنوں کئی اخبارات میں ’’دل کا وال‘‘ شائع ہوا ہے۔ یہ صحیح ہے کہ لوگ دلوں میں وال یعنی دیوار اٹھا لیتے ہیں، لیکن دل میں بجائے خود کوئی وال یعنی دیوار نہیں ہوتی۔ اصل میں یہ لفظ والو ...

مزید پڑھیں »