بنیادی صفحہ / مصنف کی تحاریر : آصف جیلانی

مصنف کی تحاریر : آصف جیلانی

پاکستان جاگیرداری نظام کے چنگل میں۔۔۔ آصف جیلانی

بہت کم لوگ اس بات پر یقین کریں گے کہ جاگیر دارانہ نظام کی تاریخ 5ہزار سال پرانی ہے۔ تاریخ دانوں کا کہنا ہے کہ اس استیصالی نظام کا آغاز اولین انسانی تہذیب کے مرکز، جنوبی عراق میں 2750 سال ...

مزید پڑھیں »

لفظ کمال کا کمال۔۔۔ تحریر: آصف جیلانی

یکم دسمبر 1965کو جب میرا بی بی سی لندن کی اردو سروس سے رشتہ استوار ہوا تھا تو اُس وقت زبان کے لحاظ سے امجدعلی صاحب اور خالد حسن قادری صاحب نہایت مقتدر ماہر مانے جاتے تھے جن سے میں ...

مزید پڑھیں »

انسانِ کامل ۔ ذاکر صاحب۔۔۔ تحریر: آصف جیلانی

میں اپنے آپ کو بے حد خوش قسمت سمجھتا ہوں کہ میں نے ذاکر صاحب کے زیر شفقت آنکھ کھولی جو نہ صرف اعلی ترین ماہر تعلیم تھے بلکہ ہندوستان کی سیاست کے بھی درخشاں ستارے تھے ۔ انہوں نے ...

مزید پڑھیں »

عدم تشدد کے علم بردار ، باشا خان۔۔۔ تحریر: آصف جیلانی

آج بادشاہ خان، عبدالغفار خان کی بتیسویں برسی ہے، اس موقع پر ان کی یادوں کا ہجوم امڈ آیا ہے۔ بلاشبہ یہ میرے لئے ایک اعزاز تھا کہ مجھے عدم تشدد کے علم برداررہنما کی میزبانی اوران کی صحبت نصیب ...

مزید پڑھیں »

وہ شب گزیدہ سحر۔۔۔ تحریر: آصف جیلانی

میں نے آنکھ مسلم قوم پرست تعلیمی ادارہ جامعہ ملیہ اسلامیہ میں کھولی جہاں میرے والد اور والدہ دونوں تدریس سے منسلک تھے۔ میں اپنے پ کو بے حد خوش قسمت سمجھتا ہوں کہ میری پرورش اس ادارہ میں ہوئی ...

مزید پڑھیں »

ہندوستان میں اردو کا دم آخریں؟— تحریر: آصف جیلانی

ہندوستان کا مقتدر اردو سہ روزہ اخبار ’’دعوت‘‘ جو پینسٹھ سال پہلے دلی سے روزنامہ کے طور پر شائع ہونا شروع ہوا تھا پچھلے ہفتہ بند ہوگیا۔ وجہ مالی مشکلات اور قارئین کی تیزی سے کم ہوتی ہوئی تعداد بتائی ...

مزید پڑھیں »

فیض احمد فیض کے ایک سو آٹھویں یوم پیدایش پر…تحریر: آصف جیلانی

کہیں تو بہر خدا آج ذکر یار چلے میں اپنے آپ کو بے حد خوش نصیب سمجھتا ہوں کہ میں نے اپنی صحافتی زندگی کا سفر روزنامہ امروز کراچی سے شروع کیا جس کے چیف ایڈیٹر فیض احمد فیض تھے۔ ...

مزید پڑھیں »

قرۃ العین حیدر کے روبرو۔۔۔ تحریر آصف جیلانی

اردو کی ممتاز ناول نویس اور افسانہ نگار قرۃ العین حیدر کو ہم سے جدا ہوئے ۱۲ سال گذر گئے۔ انہوں نے اردو میں ناول نگاری کو ایک نئی جہت ، وسعت اور گہرائی کے ساتھ ایک نیا اسلوب بخشاہے۔ ...

مزید پڑھیں »

مجاز۔۔جواں مرگ شاعر انقلاب… آصف جیلانی

ایسا محسوس ہوتا ہے کہ گردش دوراں کی بھول بھلیوں میں ہم مجاز کے انقلاب آفریں فن کے محاسن کو فراموش کرتے جارہے ہیں اور ایک رجحان تراش شاعر کی حیثیت سے انہوں نے اردو شاعری کو فکر و نظر ...

مزید پڑھیں »

فیض احمد فیض کے ایک سو آٹھویں یوم پیدایش پر…کہیں تو بہر خدا آج ذکر یار چلے۔۔۔ تحریر: آصف جیلانی

میں اپنے آپ کو بے حد خوش نصیب سمجھتا ہوں کہ میں نے اپنی صحافتی زندگی کا سفر روزنامہ امروز کراچی سے شروع کیا جس کے چیف ایڈیٹر فیض احمد فیض تھے۔ جنوری 1953میں جب میں نے امروز میں کام ...

مزید پڑھیں »

شہپر آتش ۔۔ عبد الکلام ۔۔۔ تحریر: آصف جیلانی

سن ساٹھ کے عشرے کے اوایل میں جب میں دہلی میں ہندوستان کے ممتاز ساینس دان اے پی جے عبدالکلام سے ملا تو دھان پان ایسے شخص کو دیکھ کر جس کے بال بیچ کی مانگ کے ساتھ شانوں تک ...

مزید پڑھیں »

سکون قلب کے متلاشی ۔ عبد اللہ یوسف علی۔۔۔ تحریر: آصف جیلانی

ایک اکیاسی سالہ ، لاغر ،مخبوط الحواس ، مفلس شخص، جو کئی سال سے وسطی لندن کی سڑکوں پر بے مقصد گھومتا پھرتا نظر آتا تھا ، ۱۹۵۳کے دسمبر میں جب کہ کڑاکے کی سردی پڑ رہی تھی، ویسٹ منسٹر ...

مزید پڑھیں »

ہم پر انگریزی کیسے مسلط ہوئی ۔۔۔ آصف جیلانی

برطانیہ کے مشہور تاریخ دان لارڈ مکالے 1834 سے 1838 تک ہندوستان میں ایسٹ انڈیا کمپنی کے بورڈ آف کنٹرول کے سیکرٹری تھے۔ 1835میں انہوں نے برطانوی پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا ’’ میں نے ہندوستان کے طول ...

مزید پڑھیں »

ہندوتا کے متعصبوں میں گھرا شاعر۔اٹل بہاری واجپائی… تحریر : آصف جیلانی

ہندوستان کے سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کے اس دنیا سے اٹھ جانے کی خبر سن کر مجھے 1959کے وہ دن یاد آگئے جب مجھے ان کو قریب سے دیکھنے کا موقع ملاتھا ۔ میں دلی میں پارلیمنٹ سے ...

مزید پڑھیں »